گیت نمبر ۹
آسمان  کے  تلے  زمین   کے   اُوپر
بخشا نہیں کسی اور کو یسُوع جیسا  نام
1

اُس کو خُدا ئے پاک نے بڑا رُتبہ دِیا
اُس کے وسیلے سے انسا ن کوآ زاد کیا
کہہ رہی ہے ہر زبان زمین  کے  اُوپر
2

ناشاد   برباد    لوگوں  کو   آباد   کیا
اُس کی محبت نے ویراں کو شاداب کیا
گنگناتی  ہے    فضا   زمین   کے   اُوپر
3

بوجھ تلے دبے تھکے ماندوں کو آرام مِلا
جیون کی ویران بگیا میں اِک پھُول کھلا
گونج اُٹھی ہے یہ صدا زمین  کے  اُوپر
4

جنت کے حسین خوابوں کی تعبیر ہے وہ
جو نہ ختم ہو کبھی ایسی جاگیر  ہے  وہ
مُسکرا   رہا   سماں  زمین  کے   اُوپر

Scroll to Top