گیت نمبر ۲۹۳
اَمن کا شہزادہ آیا
نُور نے آنچل پھیلایا
1

پھیلائیں دھرتی نے بانہیں
لہرا ئیں آکاش میں راہیں
گیت فرشتوں نے گایا
اَمن کا شہزادہ آیا
2

جاگے پرندے جاگی ہوائیں
گونجیں خاموشی میں صدا ئیں
صبح کا پرچم لہرایا
اَمن کا شہزادہ آیا
3

نِکلا تارا راہ دِکھانے
ایک نیا پیغام سُنانے
میں نے نام نیا پایا
اَمن کا شہزادہ آیا

Scroll to Top